گرمیوں میں ٹھنڈک پیدا کرنے والے مشروبات

گرمیوں میں ٹھنڈک پیدا کرنے والے مشروبات
گرمیوں میں ٹھنڈک پیدا کرنے والے مشروبات

گرمیوں میں ٹھنڈک پیدا کرنے والے مشروبات
پاکستان ان ممالک میں شامل ہے جہاں شدید گرمی پڑتی ہے اور  یہاں گرمیوں کا دورانیاں سردیوں کی نسبت زیادہ ہوتا ہے پچھلے چند سالوں میں پاکستان میں گرمی کی وجہ سے اموات میں بھی اضافہ ہوا ہے ۔لوڈ شیڈنگ  کی وجہ سے موسم گرما گزارنا بہت ہی مشکل کام ہے ۔گرمیوں میں اپنے آپ کو اور اپنے گھر والوں کا خیال رکھیں ۔انسانی جسم  میں ستر فیصد سے زیادہ پانی کی مقدا ر ہوتی ہے اس لیے گرمیوں میں پانی کا استعمال زیادہ سے زیادہ کریں آپ کو موسم گرما کے اثرات کو کم کرنے کے لیے کچھ مشروبات بتانے جا رہا ہوں جنہیں استعمال کر کے آپ گرمی کے اثرات کو کم  کر سکتے ہیں۔

لیموں کا شربت
لیموں کا شربت گرمیوں میں فائدہ حاصل کرنے کیلئے سب سے سستی چیز ہے۔
لیموں کا رس ایک کلو‘ شکر ڈیڑھ کلو‘ پانی میں پکا کر گاڑھی چاشنی بنالیں‘ حسب ذائقہ چمچہ دو چمچہ ٹھنڈے پانی میں ملا کر بوقت ضرورت خصوصاً دوپہر کے وقت استعمال کریں۔ جن افراد کو بلڈ پریشر کا مسئلہ نہ ہو وہ لذت کیلئے  ایک چٹکی نمک ملا کر پی سکتے ہیں ۔ یہ شربت پیاس کی زیادتی‘ گرمی سے چکر اور گرمی کی بے چینی کیلئے مفید ہے۔

شربت آلوبخارہ
سوکھا آلو بخارہ سات سو گرام یا آٹھ سو گرام گرم پانی میں رات بھگو کر صبح ہاتھ سے مسل کر چھان لیں اور اس میں ایک کلو شکر ملا کر چاشنی بنا کر رکھ لیں۔
ایسے افراد جن کے منہ کا ذائقہ کڑوا رہتا ہو‘ گرمی یا صفراوی بیماری سے متلی ہو‘ ایسی حالت میں یہ شربت بہت مفید رہتا ہے۔ صفرا کے جوش کو ساکن کرتا ہے۔ ثقیل اور دیر ہضم غذا جیسے بینگن‘ بڑا گوشت وغیرہ کا ہاضم ہے۔ وقت ضرورت چمچہ دو چمچہ استعمال کریں۔ گلے کی خراش میں استعمال نہ کریں‘ اس تکلیف میں تمام کھٹی چیزیں نقصان دہ ہیں۔

شربت گلاب
عرق گلاب800 گرام‘ شکر ایک کلو ڈال کر  گھول لیں‘ پھر ہلکی آنچ پر ایک جوش دے کر ٹھنڈا کرکے بوتل بھرلیں۔ وقت ضرورت دو سے پانچ چمچ ٹھنڈے پانی میں ملا کر استعمال کریں۔ ہاضمہ کی بے چینی‘ دماغ میں گرمی‘ نفسیاتی بے چینی میں مفید ہے۔



شربت خشخاش
خشخاش سو گرام‘ بادام سو گرام‘ چھوٹی الائچی کے دانے دس گرام سب کو پانی میں پیس کر اس کا عرق نکالیں۔ جب دو تین بار میں اچھی طرح عرق نکل چکے تو اس عرق میں اتنا پانی ملائیں کہ کل ڈھائی لیٹر ہوجائے۔ اس میں شکر دو کلو ملا کر پکا کر گاڑھی سی چاشنی بنالیں۔ شربت گلاب کی طرح استعمال کریں۔ یہ شربت نیند نہ آنا‘ دماغی کمزوری یا بدن کا دبلا ہونا میں بہت مفید ہے‘ دن میں تین بار پیا جاسکتا ہے۔

شربت عناب
عناب سو گرام پانی ایک کلو۔ رات میں بھگو کر صبح ہاتھ سے مسل کر دو سے تین جوش دے کر چھان لیں۔ اس چھنے ہوئے پانی میں ایک کلو شکر کا اضافہ کرکے چاشنی بنالیںاور  بوتلوں میں بھرلیں۔ شربت عناب خون صاف کرتا ہے‘ خون کو ٹھنڈا کرتا ہے اس لیے گرمی میں جن کودانے نکلتے ہوں ان کیلئے بہت مفید ہے۔ ایسیڈیٹی کم کرتا ہے۔ چھوٹی عمر والوں کے مہاسے اس سے آرام پاتے ہیں۔ البتہ زیادہ استعمال کرنے سے قبض ہوسکتا ہے۔

شربت اسپغول
اسپغول کا بیج گرمی کی بہت ساری تکلیف کیلئے مفید ہے ۔ پیٹ کی بے چینی‘ قبض اور پیچش دونوں کو اس سے آرام ملتا ہے۔ بدن ٹھنڈا رہتا ہے۔ ہاتھ پاؤں کی جلن خشکی دور کرکے تری پیدا کرتا ہے۔ اسپغول کا دانہ دس گرام ایک بڑے کپ میں آدھ گھنٹہ بھگودیں‘ وقت ضرورت چھان کر  پی لیں‘ دن میں دو بار تک پی سکتے ہیں۔



تخم بالنگوشربت
تخم بالنگو  پانچ سے سات گرام آدھ گھنٹہ ایک کپ پانی میں بھگولیں اور بغیر چھانے پی لیں شکر اور دودھ ملا کر بھی استعمال کرسکتے ہیں۔ گرمی سے کمزوری اور پیٹ کی گرمی میں مفید ہے۔

ھوالشافی شربت
بادام سوگرام‘ مغز تخم کدو پچیس گرام‘ مغز تخم تربوز پچیس گرام‘ مغز تخم خیارین پچیس گرام‘ مغز خربوزہ دوسوگرام‘ تیس عددچھوٹی الائچی کے دانے‘ کالی مرچ پندرہ عدد‘ خشخاش مفید پچیس گرام‘ سب کو پانی میں پیس کر کپڑے میں رکھ کر نچوڑلیں اور اس طرح بار بار کریں اس طرح تقریباً دوکلو پانی نکل آئے اس میں ڈیڑھ کلو شکر ملا کراتنا پکائیں کہ آدھ کلو پانی جل جائے‘ ٹھنڈا ہونے پر چھان کر بوتلوں میں بھرلیں‘ وقت ضرورت دو سے چار چمچ پانی میں ملا کر دن میں دو یا تین مرتبہ استعمال کرسکتے ہیں۔

گرمی کیلئے لاجواب نسخہ
یہ نسخہ گرمی کے تقریباً بہت سے امراض کا علاج ہے۔ دماغ دل کو طاقت دیتا ہے۔ بے ترتیب دھڑکن‘ گھبراہٹ‘ پیاس کی زیادتی وغیرہ میں مفید ہے۔


Post a Comment

0 Comments